Month: 2022 جنوری

حارث قدیر کا تعلق پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے علاقے راولا کوٹ سے ہے۔  وہ لمبے عرصے سے صحافت سے وابستہ ہیں اور مسئلہ کشمیر سے جڑے حالات و واقعات پر گہری نظر رکھتے ہیں۔


اس بوسیدہ نظام میں تفریح بھی سانحہ بن جاتی ہے

اس نظام نے انسان سے خوشی کا ہر احساس تک چھین لیا ہے، یہاں انسانوں کا سانس لینا دشوار ہو چکا ہے۔ جہاں زندہ رہنے کی بنیادی سہولیات کو نہ صرف کاروبار بنا دیا جائے بلکہ حکمرانوں کی عیاشیوں کو جاری رکھنے کیلئے بھی بنیادی انسانی ضرورتوں پر بھاری ٹیکس لگائے جا رہے ہوں۔ غربت، لاچاری اور بیماری سے تنگ آ کر مائیں اپنے بچوں کا گلہ گھونٹے پر مجبور ہوں، خاندانوں کے پاس مسائل سے نجات کا راستہ اجتماعی خودکشی کے علاوہ کوئی نہ ہو اور بے حس حکمران طبقات عوامی دکھوں اور تکالیف کا احساس کرنے کی بجائے انہیں یہ بتانے میں مصروف ہوں کہ وہ خوشحال ہیں۔ ایسے حالات میں تفریح سمیت خوشی اور راحت کی ہر کوشش ایک نئی اذیت اور نئے المیے کو جنم دیتی ہے۔ اس نظام کے اندر رہتے ہوئے چھوٹے سے چھوٹے بنیادی مسئلہ کابھی اب حل ممکن نہیں ہے۔ سرمایہ داری نظام کا خاتمہ اور انسانیت کا ایک سوشلسٹ مستقبل ہی اس نظام کی بربادیوں اور سانحات کا حقیقی انتقام ہو گا۔

سائیں میرے کھیتوں پر بھی رُت ہریالی بھیجو ناں: عشرت آفرین کے اعزاز میں ایک محفل

عشرت کی شاعری ان مخصوص موضوعات سے زیادہ سروکار نہیں رکھتی جو آج کی شاعری کے فیشن میں شامل ہیں اور ہر نیا شاعر اپنے وجود کا جواز ثابت کرنے کے لئے ان موضوعات پر شعر کہتا ہے…دراصل اس کی شاعری کی روح اس کا ذاتی تجربہ ہے اور یہ تجربہ معاشرے کی حقیقت بھی ہے اور اس کے دل کی آواز بھی۔

ہیپی 2022ء: سوشلزم اور ’جدوجہد‘ کا نیا سال

لاہور (ادارتی بورڈ) قارئین جدوجہد کو نیا سال مبارک!

ہمیں امید ہے کہ نئے سال میں محنت کش طبقہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں سرمایہ داری، فسطائیت، مذہبی جنونیت، جنگ، بھوک اور بیماری کے خلاف کامیاب لڑائیاں لڑے گا۔

ایک سوشلسٹ آواز کے طور پر ’جدوجہد‘ ہر ایسی لڑائی میں شامل رہے گا۔ ہم نئے سال کی خوشیاں اس یقین کے ساتھ مناتے ہیں کہ ایک دن دنیا بھر کے مظلوم اور محکوم ایک نیا عہد بھی منائیں گے۔