پاکستان

ہارون رشید کا پروفیسر ہود بھائی اور عمار علی جان پر ’سچ کُش‘ حملہ

پروفیسر ہود بھائی اور ڈاکٹر عمار علی جان ملک کی دو مقبول شخصیات ہیں۔ وہ اس معاشرے کا ضمیر ہیں۔ ہارون رشید جیسے لوگ بھلے ہی طاقتور ترین لوگوں کے پروردہ ہوں، سچ سب سے زیادہ طاقتور ہوتا ہے۔ طاقت، سرمایہ، ظالمانہ قانون، جبر…کچھ بھی سچ کو شکست نہیں دے سکتا۔

بولتے کیوں نہیں میرے حق میں، آبلے پڑ گئے زباں میں کیا

کتنا مشکل ہوگا وہ عرصہ اُس ماں کے لیے جس کا لختِ جگر پچھلے 9 سالوں سے پابندِسلاسل ہے۔ کامریڈ بابا جان کی والدہ پچھلے 9 سالوں سے حکومت، ریاست اور عدلیہ کے اعلیٰ عہدیداروں سے اپنے بے قصور بیٹے کے لیے انصاف کی امید لگا کے بیٹھی ہیں۔

قاضی فائز عیسیٰ: سپریم جوڈیشل کونسل میں زیر سماعت صدارتی ریفرنس کالعدم قرار

جسٹس فائز عیسیٰ کے موقف کے مطابق اس ریفرنس کے محرکات میں ان کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے دو رکنی بینچ کا اسلام آباد میں تحریک لبیک کے دھرنے کے خلاف فیصلہ دینا تھا۔ جس میں انھوں نے مسلح افواج کے سربراہ ہان کو ہدایت کی تھی کہ وہ اپنے ادارے میں اہلکاروں کے خلاف کارروائی کریں جو اپنے حلف کی خلاف ورزی میں ملوث پائے گئے۔

سٹیل مل کا مقدر؟

اس ملک کی تمام صنعت، زراعت اور اقتصادیات کو ایک انقلابی تبدیلی کے ذریعے منصبوبہ بند معیشت میں استوار کرکے منافع خوری اور کرپشن کا خاتمہ کیا جا سکتا ہے۔

فرسٹ جنریشن وارفیئر

دراصل پہلی بار اگر کوئی غیر ملکی سفید فام خاتون پاکستانی سیاست میں اہم کردار بن کر ابھریں تو وہ برطانوی ماڈل کرسٹین کیلر تھیں جن کا انتقال کچھ عرصہ قبل ہوا۔

ڈیتھ اسکواڈز کے خلاف بلوچستان سراپا احتجاج

ایسی کاروائیاں بلوچستان میں روز کا معمول ہیں لیکن ریاستی آشیرباد کی وجہ سے یہ لوگ تمام تر قانونی گرفت اور پابندی سے مبرا ہیں۔ ان گروہوں کے خلاف عوامی غم و غصہ بہت زیادہ ہے۔ اسی وجہ سے حالیہ ڈکیتی کی واردات نے اس عمل انگیز کا کردار ادا کیا جس سے تمام بلوچ علاقوں، حتیٰ کہ کراچی تک اس واق

یہ پی ٹی آئی ایم ایف کی حکومت ہے!

حالات کچھ بھی ہو جائیں حفیظ شیخ اور رضا باقر اپنے حقیقی مالکوں کو پیسے دینے نہیں بھولتے۔ جب ملک میں کرونا وائرس ہر طرف پاؤں پھیلا رہا ہے، ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل سٹاف حفاظتی اقدامات نہ ہونے پر کرونا کا شکار ہو رہے ہیں، ایسے حالات میں بھی حفیظ شیخ اور رضاباقر کی جوڑی نے اس ماہ عالمی مالیاتی اداروں کو 278 ارب روپے (1.7 ارب ڈالر) غیر ملکی قرضوں کی واپسی کے نام پر باہر بھیج دئیے ہیں۔