Day: جولائی 7، 2021

حارث قدیر کا تعلق پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے علاقے راولا کوٹ سے ہے۔  وہ لمبے عرصے سے صحافت سے وابستہ ہیں اور مسئلہ کشمیر سے جڑے حالات و واقعات پر گہری نظر رکھتے ہیں۔


امتحان ملتوی نہ کرنا طلبہ کا مستقبل تباہ کرنا ہے: زینب احمد

ظاہر ہے ریاست طاقتور ہے۔ ہم نے اپنے حق کیلئے جدوجہد کی ہے اور جدوجہد کو جاری رکھیں گے۔ اگر ہمارے مطالبات تسلیم نہیں کئے جاتے اور جبری طور پر ہم سے امتحانات لئے جاتے ہیں تو ہم کوشش کریں گے کہ اپنا قیمتی سال اور مستقبل بچانے میں کامیاب ہوں۔ تاہم ہم اب اپنے حقوق کی جدوجہد کو کسی طور پر ترک نہیں کرینگے۔ ہم نے یہ ضرور سیکھ لیا ہے کہ یہاں حق لینے کیلئے لڑنے کے علاوہ اور کوئی راستہ موجود نہیں ہے۔ آج اگر ہم کامیاب نہ بھی ہو سکے تو مستقبل میں ضرور کامیابی حاصل کریں گے۔