مزید پڑھیں...

خیبر پختونخوا میں طالبان کی آمد اور حملے: امن کیلئے احتجاج

لوئر دیر میں رکن خیبر پختونخوا اسمبلی ملک لیاقت علی پر حملہ، مٹہ اور سوات کے دیگر علاقوں میں پولیس پر حملوں سے خطے میں تشویش کی نئی لہر دوڑ گئی ہے۔ کے پی کے مختلف علاقوں میں طالبان کی موجودگی اور دہشت گردی کے واقعات کے خلاف احتجاج کا سلسلہ بھی شروع ہو گیا ہے۔

ایران جوہری معاہدے کی بحالی کے امکانات واضح

یورپی یونین کے مذاکرات کاروں کی جانب سے امریکہ اور ایران کے دستخط کرنے کیلئے حتمی مسودے کا متن تیار کیا ہے۔ کئی مہینوں کی مسلسل ناکامی کے بعد اب ایران جوہری معاہدے کی بحالی کے امکانات واضح ہوتے جا رہے ہیں۔

تحریک جموں کشمیر: موقع پرستوں کا کردار اور انقلابی ذمہ داریاں

مظلوم قومیتوں کے کاسا لیس حکمران طبقے کا تاریخی کردار قومی سوال کو اپنی حصہ داری کے حصول کے لئے استعمال کرنا ہوتا ہے۔ جب بھی کوئی بنیادی انسانی ضروریات کے حصول کے لیے تحریک پنپنا شروع کرتی ہے تو یہ دوست کا روپ دھار کر قومی سوال کو اجاگر کرنا شروع کر دیتا ہے۔

قوم یوتھ کا وینا ملک ڈس آرڈر: اے کیس آف ثمینہ پیرزادہ

قوم یوتھ کی خاصیتوں میں سے ایک خاصیت یہ بھی ہے کہ انہیں دوسروں کی کرپشن نظر آتی ہے۔ انہیں ملک میں پھیلی کرپشن کی فکر کھائے جاتی ہے۔ اپنے ایک لیڈر کے علاوہ باقی سب چور نظر آتے ہیں۔ انہیں یہ بھی لگتا ہے کہ انسان سارے خود نیک اورپرہیزگار ہو جائیں تو دنیا سے ہر طرح کے مسائل کا خاتمہ ہو سکتا ہے۔ خود بے شک ٹریفک سگنل توڑ کر بھاگنے میں ایک لمحہ دیر نہیں کرینگے، لیکن اگر کوئی دوسرا نظر آجائے تو فوراً یہ اعلان فرمائیں گے کہ قانون کی عملداری ہو تو ملک کے اکثریتی مسائل حل ہو سکتے ہیں۔

طالبان خان کا تازہ قصہ: ٹی ٹی پی امریکی سازش کا حصہ

کہا جا رہا ہے کہ پی ٹی آئی کے وزیر اعلیٰ تک طالبان کو بھتہ دے رہے ہیں۔ پاکستان تحریک انصاف کے وزیر اور رہنما طالبان کو بھتہ دے رہے ہیں۔ اگر یہ درست ہے تو اس ’امریکی سازش‘ میں طالبان خان کی اپنی پارٹی شامل ہے۔
طالبان خان! ہمت ہے تو ٹی ٹی پی کے خلاف جنگ آزادی شروع کرو! بنی گالہ میں بیٹھ کر امریکہ سے آزادی کا ڈرامہ بہت ہو چکا۔

امریکہ: ایف بی آئی کا افریقی سوشلسٹ پارٹی پر چھاپہ، روسی حمایت کا شک

”ایف بی آئی کا ہم پر روسیوں سے احکامات لینے کا الزام سب سے زیادہ مضحکہ خیز اور غیر معمولی بیانیہ ہے۔ یہ سیاہ فام لوگوں کے حق پر حملہ ہے، یہ افریقہ کے ہر مربع انچ کی مکمل آزادی کیلئے ہماری جدوجہد پر حملہ ہے۔“