Month: 2022 جنوری

فاروق سلہریا روزنامہ جدوجہد کے شریک مدیر ہیں۔ گذشتہ پچیس سال سے شعبہ صحافت سے وابستہ ہیں۔ ماضی میں روزنامہ دی نیوز، دی نیشن، دی فرنٹئیر پوسٹ اور روزنامہ پاکستان میں کام کرنے کے علاوہ ہفت روزہ مزدور جدوجہد اور ویو پوائنٹ (آن لائن) کے مدیر بھی رہ چکے ہیں۔ اس وقت وہ بیکن ہاوس نیشنل یونیورسٹی میں اسسٹنٹ پروفیسر کے طور پر درس و تدریس سے وابستہ ہیں۔


کینیڈا میں بڑھتی ہوئی غربت پر جسٹن ٹروڈو کا عمران خان کے نام خط

یور ہائی نس! آپ کی کینیڈا بارے تقریر کے بعد مجھے اب دو باتوں بارے آپ سے رائے لینی ہے۔ اؤل: ان لاکھوں درخواستوں کا کیا کروں جو پاکستانیوں نے کینیڈا کی امیگریشن کے لئے دے رکھی ہیں۔ دوم: کینیڈا میں رہائش پذیر لاکھوں یوتھیوں کو واپس پاکستان بھیج دوں یا کینیڈین غربت کی دلدل میں پڑا رہنے دوں۔

سوڈان: ہزاروں مظاہرین کا آمریت کے خلاف احتجاج، ملک میں افراتفری

جمہوریت کی حامی تحریک نے جرنیلوں کو اقتدار سے ہٹانے اور مکمل سویلین حکومت کے قیام پر اصرار کیا ہے۔ تاہم جرنیلوں کا کہنا ہے کہ وہ صرف ایک منتخب انتظامیہ کو اقتدار سونپیں گے اور انتخابات جولائی 2023ء میں ہونگے۔

6 روز سے لاپتہ طالبعلم رحمت اللہ پتافی کو بازیاب کیا جائے: ایچ آر سی پی

”شہید ذوالفقار علی بھٹو یونیورسٹی آف لا کراچی کے طالبعلم رحمت اللہ پتافی کو قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں کی جانب سے 24 جنوری کو اغوا کیا گیا تھا۔ ابھی تک ان کے ٹھکانے کی معلومات بھی نہیں ہے۔ تشویشناک رپورٹس ہیں کہ انہیں سوشل میڈیا پر ماورائے عدالت قتل عام کے خلاف آواز اٹھانے کی وجہ سے حراست میں رکھا گیا ہے۔ انہیں فوری طور پر رہا کیا جائے۔“

شیخ رشید اور معید یوسف کی بھی چھٹی ہونے والی ہے

اگر عمران خان بغیر کسی پرواہ کے شہزاد اکبر جیسے قریبی ساتھی کو کاٹ سکتے ہیں تو کسی کو بھی باوقار طریقے سے باہر نکلنے کی کوئی امید کیسے ہو سکتی ہے۔ اگر لیڈر سے بدتمیزی کی جائے تو پھر صورتحال اور بھی خراب ہو سکتی ہے۔

سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند کروانے میں بھارت 5 بڑے ممالک میں سرفہرست

روس نے کریملن سے متعلق ٹویٹس ڈیلیٹ کروائیں، جاپان اور ترکی میں سیاسی بیادوں پر ٹویٹس ہٹانے کی درخواستیں موصول ہوئیں اور بھارت نے اپنے ملک میں جاری تنازعات اور آزادی پسندوں کی ٹویٹس ہٹانے کی درخواستیں کیں۔

عمران خان کے دور میں کرپشن کیوں بڑھی؟

ہاں، اگر کرپشن کی اس تعریف کو مد نظر رکھا جائے کہ بدعنوانی دوسروں کے وسائل اور حقوق پر بزور طاقت استعمال کا نام ہے تو بلاشبہ موجودہ ہائبرڈ نظام زیادہ بدعنوان ہے کیونکہ اس میں طاقت کا ارتکاز بڑھ گیا ہے۔ بہ الفاظ دیگر عمران خان کے دور میں کرپشن اس لئے بڑھ گئی ہے کہ ہائبرڈ نظام کے تحت جمہوریت اور بھی کم ہو گئی ہے۔