Day: جون 22، 2021

فاروق سلہریا روزنامہ جدوجہد کے شریک مدیر ہیں۔ گذشتہ پچیس سال سے شعبہ صحافت سے وابستہ ہیں۔ ماضی میں روزنامہ دی نیوز، دی نیشن، دی فرنٹئیر پوسٹ اور روزنامہ پاکستان میں کام کرنے کے علاوہ ہفت روزہ مزدور جدوجہد اور ویو پوائنٹ (آن لائن) کے مدیر بھی رہ چکے ہیں۔ اس وقت وہ بیکن ہاوس نیشنل یونیورسٹی میں اسسٹنٹ پروفیسر کے طور پر درس و تدریس سے وابستہ ہیں۔


تعلیم مادری زبان میں نہیں، معیاری انداز میں ہونی چاہئے

مجھے یقین ہے کہ اگر محنت کشوں کے بچے بھی ان سکولوں میں جائیں جہاں تعلیمی معیار ویسا ہی ہو جیسا ایچی سن، بیکن ہاؤس یا اس قسم کے ایلیٹ سکولوں میں ہوتا ہے تو یہ بچے بھی اتنے ہی قابل ثابت ہوں گے جتنے دیگر بچے ثابت ہوتے ہیں۔

جبری جسم فروشی کیلئے انسانی سمگلنگ، سالانہ 100 ارب ڈالر آمدن ہوتی ہے

”یہ رقم امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ایپل کارپوریشن کو ہونے والے سالانہ منافع کے تقریباً برابر بنتی ہے اور اس سالانہ ناجائز کمائی کے حجم سے ہی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ عالمی سطح پر جنسی استحصال کے لیے انسانوں کی اسمگلنگ کتنا بڑا اور شدید مسئلہ ہے۔“